اسلام آباد: جس وقت اپوزیشن جماعتیں وزیراعظم عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد لانے کے منصوبے پر کام کر رہی ہیں، اس وقت ن لیگ نے دعویٰ کیا ہے کہ وزیراعظم ملک کے اہم اداروں کو سیاست زدہ بنا رہے ہیں۔

ایسی نوعیت کا بیان اپوزیشن کی کوششوں کو تقویت دے سکتا ہے لیکن اندازہ غلط ثابت ہونے یا اس معاملے میں شامل دیگر جماعتوں کا ساتھ نہ ملنے کی صورت میں ن لیگ کو نقصان پہنچا سکتا ہے۔

گزشتہ ہفتے کے حالات و واقعات بہت ہی اہم تھے اور کئی لوگ اس وقت حیران و پریشان نظر آئے جب آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے صدر مملکت اور ساتھ ہی وزیراعظم کے ساتھ ملاقات کی۔انگریزی روزنامہ ڈان میں لکھا تھا کہ اگرچہ آرمی چیف کی وزیراعظم کے ساتھ ملاقات افغانستان کے حوالے سے منعقدہ سیشن کے تناظر میں ہوئی تھی لیکن ایسا بمشکل ہی کبھی ہوا ہے کہ آرمی چیف نے صدر مملکت اور وزیراعظم سے ایک ہی دن ملاقات کی ہو۔