غیر ملکی میڈیا کے مطابق جنوبی کورین کے صوبے گیون گی کے شہر پوچیون میں ایک جوڑے نے تقریباً 3 سال تک اپنی 15 ماہ کی بیٹی کو پلاسٹک کے کنٹینر میں رکھا۔

جنوبی کورین میڈیا کے مطابق یہ واقعہ اس وقت سامنے آیا جب 15 ماہ کی بچی کو نا تو پری اسکول میں داخلے کے لیے رجسٹر کرایا گیا اور نا ہی اسے میڈیکل چیک اپ کے لیے اسپتال لایا گیا، پولیس نے بچی کی والدہ سے متعدد بار رابطوں کے باوجود اسے نہ دکھانے پر چائلڈ ویلفیئر قوانین کے تحت شکایت درج کرائی اور پھر معاملے کی تحقیقات شروع کر دیں۔

پولیس کو شبہ ہوا کہ خاتون نے اپنی بیٹی کو قتل کرنے کے بعد اسے اپنے ہی گھر میں چھپا دیا ہے اور جب پولیس نے اس کے گرفتار شوہر کو چھوڑا تو اس نے بچی کی لاش کو اپنے والدین کے گھر منتقل کر دیا جہاں دونوں نے بچی کی لاش کو چھپانے کے لیے ایک پلاسٹک کے کنٹینر میں بند کر کے چھت پر چھپا دیا۔