لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنااللہ نے کہا کہ گھڑیاں چوری کر کے قوم اور ملک کی عزت کو نقصان پہنچایا گیا، عمران خان نے اپنے کالے کرتوتوں کی وجہ سے اندر جانا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیاست میں ایک دوسرے کو ساتھ لے کر چلنا پڑتا ہے کیونکہ سیاست میں گفتگو اور مذاکرات کے بغیر آپ آگے نہیں بڑھ سکتے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب میں عدم اعتماد کی تحریک پیش کرنا ہے یا نہیں، اس پر کوئی حتمی فیصلہ نہیں ہوا، کل  بھی میٹنگ ہوئی آج بھی ہوگی، ہم اپنے قائد نواز شریف سے مشورہ  لیں گے۔

رانا ثنااللہ کا کہنا تھا کہ ذاتی طور پر سمجھتا ہوں کہ پنجاب اسمبلی توڑی جائے اور کے پی اسمبلی  توڑی جائے تو ہم وفاقی  حکومت کو برقرار   رکھیں، بلوچستان حکومت برقرار رہے گی کیونکہ بلوچستان اور  سندھ والوں نے اسمبلی توڑنے سے انکار کردیا ہے، آصف  زرداری نے دو ٹوک کہا ہے کہ اسمبلی نہیں توڑیں گے، وفاقی اور دو صوبوں کی حکومتیں برقرار  رہیں، اس لیے پنجاب میں بھلے ضمنی یا جنرل الیکشن ہوں ہم بہتر پوزیشن میں ہوں گے۔