ایم ایف پروگرام کے ساتھ چلنا ہے  لیکن آئی ایم ایف کے کچھ مطالبات عوام کے لیے ناقابل برداشت ہیں۔

انہوں نے کہاکہ آئی ایم ایف سے شرائط نرم کرنےکی کوشش کررہے ہیں۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ فوج، اسٹیبلشمنٹ یا عدلیہ ہو، ان سب کو یہ سمجھ لگ جائے گی کہ چار سال کا جو تجربہ ملک کے ساتھ کیا گیا اس کا خمیازہ قوم کو بھگتنا پڑرہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ جب دنیا میں گیس انتہائی سستی تھی تب پی ٹی آئی نے نہیں خریدی لیکن جب دنیا میں پیٹرول مہنگا ہوا تو  یہ سستا  کرکے ملک کو خسارے میں جھونک گئے، پاکستان کی تاریخ کا 80 فیصد قرض عمران خان کے دور میں لیا گیا ہے اور ان کا قرض ہمارے حصے میں آیا ہے، یکم اپریل کو وزارت خزانہ کہہ چکی تھی کہ آخری سہ ماہی کے ترقیاتی بجٹ کا پیسہ نہیں ہے۔