مسلم لیگ ن کی قیادت کا لندن میں جمعرات کو جو اجلاس ہوا، اس میں میاں نوازشریف کی وطن واپسی کے بارے میں پارٹی قیادت کی رائے لی گئی، سینئر ترین رہنماؤں نے میاں نوازشریف سے درخواست کی کہ وہ وطن آکر انتخابی مہم کی قیادت کریں۔یہ رہنما جانتے ہیں کہ میاں نوازشریف خود بھی وطن واپسی کا بے چینی سے انتظار کررہے ہیں،  وہ سمجھتےہیں کہ اناڑی عمران خان نے 4 سال میں معیشت کا جوجنازہ نکالا ہے، اگر غلطی سے بھی پی ٹی آئی دوبارہ برسراقتدار آئی تو ملک کو پیروں پہ پھر سے کھڑا کرنا ناممکن ہوجائے گا۔

مریم نواز کو پارٹی آرگنائزر بنا کر میاں نوازشریف وطن بھیج تو رہے ہیں مگر وہ جانتے ہیں کہ سیاسی بحران میں گھرے ملک اور اقتصادی مسائل میں جکڑے عوام کو اگر ساتھ لے کر چلنا ہے تو یہ کام محض مریم نواز یا حمزہ شہباز پر چھوڑنا نہیں چاہیے۔